Home / Tag Archives: تم پوچھو اور میں نا بتاٶں ایسے تو حالات نہیں

Tag Archives: تم پوچھو اور میں نا بتاٶں ایسے تو حالات نہیں

تم پوچھو اور میں نا بتاوں ایسے تو حالات نہیں (قتیل شفائی)

تم پوچھو اور میں نا بتاوں ایسے تو حالات نہیں ایک زرا سا دل ٹوٹا ہے اور تو کوئی بات نہیں کس کو خبر تھی سانولے بادل بن برسے اڑ جائے گے ساون آیا لیکن اپنی قسمت میں برسات نہیں ٹوٹ گیا جب دل تو پھر سانسوں کا نغمہ کیا معنی؟ گونج رہی ہے کیوں شہنائی جب کوئی بارات نہیں میرے غمگیں ہونے پر احباب ہیں حیران قتیل؟ جیسے میں پتھر ہوں میرے سینے میں جزبات نہیں جناب قتیل شفائی …

Read More »