Home / مستقل سلسلے / فلیٹ ارتھ چیک میٹ / فلیٹ ارتھ چیک میٹ سوال 12

فلیٹ ارتھ چیک میٹ سوال 12

سپیکٹروسکوپی ایک باقاعدہ علم ہے۔ روشنی ہر عنصر کے مطابق اپنا بہت ہی پریسائز فنگر پرنٹ بناتی ہے۔ ان کی گہرائی سے ہمیں درجہ حرارت کا پتہ لگتا ہے۔ ان کی ویو لینتھ کی شفٹ سے گیس کی حرکت کا،اس کے علاوہ بھی کئی طرح کی معلومات ہمیں روشنی کے سپیکٹم سے ملتی ہے۔ روشنی کے اس بار کوڈ سے انتہائی دور کے ستاروں کی کیمسٹری کا تجزیہ کیا جا سکتا ہے۔

اگر کوئی دو ستاروں کی روشنی کا سپیکٹم ایک جیسا ہے تو اُن کی خصوصیات بھی ایک جیسی ہونی چاہیے۔ چاند اور سورج کا سپیکٹم ایک جیسا ہے۔ فلیٹ ارتھرز کے مطابق اگر چاند کی اپنی روشنی ہے تو کیا وجہ ہےکہ ایک جیسا سپیکٹم ہونے کے باوجود دونوں بالکل مختلف نظر آتے ہیں؟کیا وجہ ہے کہ چاند بھی سورج کی ماند روشن نہیں ہے؟

گلوبرز مانتے ہیں کہ چاند کی اپنی روشنی نہیں ہے۔ چاند سورج کی روشنی کو ریفلیکٹ کرتا ہے جس بنا پر چاند اور سورج کا سپیکٹم ایک جیسا ہے۔

چاند اور سورج کے ایک جیسے سپیکٹم کی فلیٹرز کیا وضاحت دیتے ہیں؟

About محمد سلیم

محمد سلیم ایک کمپیوٹر پروگرامر ہیں اور ایک سافٹ وئیر ہاوس چلا رہے ہیں۔ سائنس خصوصا فلکیات پر پڑھنا اور لکھنا ان کا مشغلہ ہے۔ ان کے مضامین یہاں کے علاوہ دیگر کئی ویب سائٹس پر بھی پبلش ہوتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *