Home / فلکیات / بے بی سٹار

بے بی سٹار

سولر سسٹمز ایک دم سے نہیں بن جاتے بلکہ یہ ایک لمبا پراسس ہے۔ سولر سسٹم گیس اور ڈسٹ کے بادل سے بنتے ہیں۔ بادلوں کے درمیان میں نوزائیدہ ستارہ جس کو پروٹو سٹار بھی کہا جاتا ہے بنتا ہے اور بادل ایک ڈسک کی شکل اختیار کر کے اس کے اردگرد گھومنا شروع کردیتے ہیں۔ اس ڈسک کو پروٹو پلینٹری ڈسک کہتے ہیں۔

چلی کی الما ابزرویٹری نے ایسا ہی ایک نو زائیدہ ستارہ دریافت کیا ہے جو کہ ابھی اپنے ابتدائی اسٹیج پر ہے۔ اس بےبی سٹار کو L1527  کا نام دیا گیا ہے۔ یہ بے بی سٹار ہمیں ہمارے سولر سسٹم کے ابتدائی دنوں کے راز بتائے گا۔ یہ کچھ ایسا ہی ہے جیسے ہم اپنے سولر سسٹم کو اپنی آنکھوں کے سامنے بنتا دیکھ رہے ہوں۔ L1527 ہم سے 450نوری سال کے فاصلے پر ہے اور اس کی ڈسک  ہم سے کچھ اس اینگل پر ہے کہ ہم آسانی سےاس کو دیکھ سکتے ہیں۔

کسی بھی سولر سسٹم میں زیادہ تر سیارے اپنے ستارے کے خط استوا کے گرد گھومتے ہیں مگر کچھ کا مدار چند ڈگری تبدیل ہوتاہے۔ ہمارے اپنے سولر سسٹم میں بہت سے سیارے سورج کے خط استوار کے گرد نہیں گھومتے ۔ ایسا کیوں ہوتا ہے؟ تمام سیارے ایک ہی لائن میں کیوں نہیں آتے جبکہ وہ سب ایک ہی پلینٹری ڈسک میں جنم لیتے ہیں۔ یہ وہ سوال ہے جس کا کوئی بھی تسلی بخش جواب ہمارے پاس موجود نہیں ہے۔مگر L1527کی ڈسک کو دیکھ کر شاید ہمیں اس کا جواب ملنے والا ہے کیونکہ L1527کے گرد گھومنے والی بادلوں کی ڈسک دوحصوں میں تقسیم ہے اور دونوں حصے مختلف اینگلز پر گھوم رہے ہیں۔ اس کا مطلب ہر ڈسک میں بننے والے سیارے مختلف اینگل رکھتے ہونگے، یا پھر نہیں،  ابھی کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہوگا۔  یہاں پر ایک او ر سوال بھی جنم لیتا ہے کہ یہ ڈسک دو حصوں میں تقسیم کیسے ہوئی۔

بہرحال جو بھی ہو L1527 ہمیں بہت سے سوالوں کے جواب دینے والا ہے۔

About محمد سلیم

محمد سلیم ایک کمپیوٹر پروگرامر ہیں اور ایک سافٹ وئیر ہاوس چلا رہے ہیں۔ سائنس خصوصا فلکیات پر پڑھنا اور لکھنا ان کا مشغلہ ہے۔ ان کے مضامین یہاں کے علاوہ دیگر کئی ویب سائٹس پر بھی پبلش ہوتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *