Home / مستقل سلسلے / انگلش سے کیا رنجش / انگلش سے کیا رنجش ۔ چوتھی قسط

انگلش سے کیا رنجش ۔ چوتھی قسط

مٹیریل ناؤن(Material Noun):
مٹیریل کا مطلب ہوتا ہے مادی۔ لہٰذا
” ایسی مادی اشیاء جن سے مزید اشیاء بنائی جا سکیں، کا نام مٹیریل ناؤن کہلاتا ہے۔ ”

جیسے لوہا(Iron)۔ لوہا ایک مادی شے ہے اور اس سے ضرورت کی مزید بہت سی اشیاء بنائی جا سکتی ہیں۔ اسی طرح پلاسٹک(Plastic) جس سے بھی بہت ساری اشیاء بنائی جا سکتی ہیں۔ مزید مثالیں
goldسونا, silverچاندی, clayمٹی, woodلکڑی, waterپانی, milkدودھ, glassشیشہ etc . . .

اَیبسٹریکٹ ناؤن(Abstract Noun):
ایبسٹریکٹ کا مطلب ہوتا ہے، تصوراتی یا خیالی۔ لہٰذا
” ایسی اشیاء جو غیرمادی یا تصوراتی ہوں، کا نام ایبسٹریکٹ ناؤن کہلاتا ہے۔ ”

جیسے زندگی(Life)۔ زندگی کا کوئی مادی وجود نہیں ہے جس کی بنا پر ہم اس کی شکل و صورت یا حجم وغیرہ بتا سکیں۔ اس لیے زندگی(Life) ایک ایبسٹریکٹ ناؤن ہے۔ اسی طرح خوشی(Joy) بھی اپنا مادی وجود نہیں رکھتی لہٰذا یہ بھی ایبسٹریکٹ ناؤن ہے۔ مزید مثالیں
deathموت, griefغم, beautyخوبصورتی, honestyایمانداری, healthصحت, furyغصہ, peaceامن etc . . .

کولیکٹِو ناؤن(Collective Noun):
کولیکٹِو کا مطلب ہوتا ہےاجتماعی۔ لہٰذا
” ایک ہی جنس کی اشیاء کے اجتماع یا گروپ کا نام، کولیکٹو ناؤن کہلاتا ہے۔ ”

جیسے کلاس(Class) جو کہ ایک ہی طرح کے طلباء کے اجتماع یا گروپ کا نام ہے اس لیے کولیکٹو ناؤن ہے۔ اسی طرح درجن(Dozen) جو ایک جیسی بارہ(12) اشیاء کا گروپ ہے بھی ایک کولیکٹو ناؤن ہے۔ مزید مثالیں
staffعملہ, armyفوج, herdریوڑ, flockغول, policeپولیس, teamٹیم, bundleگٹھہ, packetپیکٹ etc . . .

پروناؤن(Pronoun):
” ایسا ورڈ جو کسی ناؤن کی جگہ استعمال ہو یا کسی ناؤن کی طرف اشارہ کرے، پروناؤن کہلاتا ہے۔ ”

جیسا کہ مَیں(I)۔ جب کوئی شخص کلام کر رہا ہوتا ہے تو وہ اپنے نام کی جگہ (I) استعمال کرتا ہے اس لیے یہ پروناؤن ہے۔ اسی طرح یہ(This) کسی ناؤن کی طرف اشارہ کرتا ہے اس لیے پروناؤن ہے۔ مزید مثالیں
Heوہ, sheوہ, youتم،آپ, thatوہ, whoکون،کس نے, whatکیا, eachکچھ میں سے ایک, everyہر ایک, etc . . .

اَجیکٹِو(Adjective):
” ایسا ورڈ جو کسی ناؤن یا پروناؤن کی کوئی خصوصیت بیان(Qualify) کرے، اجیکٹو کہلاتا ہے۔ ”
٭ اجیکٹو، ناؤن یا پروناؤن سے متعلق ان سوالوں کا جواب ہو سکتا ہے:
کیسا، کس قسم کا(What kind of) ؟ کون سا(What, Which)؟ کتنا،کتنی،کتنے(How much, How many)؟

مثلاًکیسی کتاب یا کس قسم کی کتاب؟(What kind of book?)۔ دِلچسپ کتاب(Interesting book)۔ اس مثال میں کیسی یا کس قسم کی، کا جواب ہے “دلچسپ” پس “دلچسپInteresting” اجیکٹو ہے۔ اسی طرح کون سا شخص؟(Which person)۔ وہ شخص (That person)۔ اس مثال میں کون سا کا جواب ہے “وہ” پس “وہThat” اجیکٹو ہے۔ اور کتنے لوگ؟(How many people)۔ پچاس لوگ(Fifty)۔ اس مثال میں کتنے کا جواب “پچاس” ہے پس “پچاسFifty” اجیکٹو ہے۔

یہ سب مثالیں ناؤن سے متعلق تھیں۔ اب ایک مثال پروناؤن سے متعلق بھی ملاحظہ ہو۔
آپ کیسے ہیں؟(How are you?)۔ میں بالکل ٹھیک ہوں(I am alright)۔ اس مثال میں کیسے کا جواب ہے “بالکل ٹھیک” پس “بالکل ٹھیکalright” اجیکٹو ہے۔

آرٹیکل(Article):
” ایسا ورڈ جو کسی ناؤن کو عام یا خاص کرتا ہے، آرٹیکل کہلاتا ہے۔ ”

٭ a اور an کسی ناؤن کو عام کرتے ہیں۔ یہ (any) کی شارٹ فارم ہیں۔ واول ساؤنڈ سے پہلے an جبکہ کانسونینٹ ساؤنڈ سے پہلے a استعمال کیا جاتا ہے۔ مثالیں:
میں نے ایک جانور دیکھا۔(I saw an animal) میں an آرٹیکل ہے جو جانور کو عام کر رہا ہے یعنی (An animal) سے مراد کوئی جانور(Any animal) بھی ہو سکتا ہے۔ اسی طرح وہ ایک آدمی ہے۔(He is a man) میں a آرٹیکل ہے جو آدمی کو عام کر رہا ہے یعنی (A man) سے مراد کوئی آدمی(Any man) بھی ہو سکتا ہے۔

٭ نوٹ کیا جا سکتا ہے کہ اینیمل کے شروع میں واول ساؤنڈ ہونے کی وجہ سے اس سے پہلے an استعمال کیا گیا ہے جبکہ مَین کے شروع میں کانسونینٹ ساؤنڈ ہونے کی وجہ سے اس سے پہلے a استعمال کیا گیا ہے۔

٭ The کسی ناؤن کو خاص کرتا ہے۔ یہ (This, That, These, Those) کی شارٹ فارم ہے۔ (This, That, These, Those) اشارہ کرنے والے ورڈز ہیں۔ جب کسی ناؤن کی طرف اشارہ کر دیا جاتا ہے تو وہ خاص ہو جاتا ہے۔ The کو واول ساؤنڈ سے پہلے “دی” جبکہ کانسونینٹ ساؤنڈ سے پہلے “دا” پڑھا جاتا ہے۔ مثالیں(اوپر دی گئی مثالوں کی مدد سے ہی دی جائیں گی تا کہ بات کو آسانی سے سمجھا جا سکے):

جانور چر رہا تھا۔(The animal was grazing.) میں The آرٹیکل ہے جو کہ جانور کو خاص کر رہا ہے۔ (The animal) کا مطلب ہے وہ جانور(That animal) جسے پہلے دیکھا گیا۔(یہاں نوٹ کریں کہ The کس طرح That کی شارٹ فارم ہے)۔
اسی طرح دوسری مثال: آدمی گاؤں میں رہتا ہے۔(The man lives in a village) میں The آرٹیکل ہے جو کہ آدمی کو خاص کر رہا ہے۔ (The man) کا مطلب ہے وہ آدمی (That man) جس کا پہلے ذکر ہو چکا ہے۔

٭ جب کسی کامن ناؤن کا پہلی بار ذکر کیا جاتا ہے تو وہ عام ہوتا ہے لہٰذا اس کے ساتھ (a,an) استعمال کیے جاتے ہیں لیکن جب اسی ناؤن کا دوبارہ ذکر کیا جاتا ہے تو تب اسی کی طرف اشارہ ہوتا ہے لہٰذا وہ ناؤن خاص ہو جاتا ہے اس لیے اس کے ساتھ (the) استعمال کیا جاتا ہے۔ کہانیوں(Stories) میں یہ بات واضح نوٹ کی جا سکتی ہے۔ مثلاً
There was a farmer in a village. The farmer was very old.
پہلے جملے میں کسان(farmer) کا ذکر پہلی بار ہوا ہے تو اس کے a استعمال کیا گیا ہے۔ دوسرے جملے میں جب farmer کا ذکر دوسری بار ہواہے تو اب یہ وہ کسان ہے جس کا ذکر پہلے جملے میں ہو چکا اس لیے اب اس کے ساتھ the استعمال کیا گیا ہے۔

 

٭ سیکھنے کے لیے سوال یا سوالات کیے جا سکتے ہیں۔
٭ اہلِ علم بہتری کی تجاویز دے سکتے ہیں۔

About انعام الحق

انعام الحق صاحب کا تعلق پاکستان کے مشہور صنعتی شہر فیصل آباد سے ہے۔ آپ درس و تدریس اور تحقیق کے شعبہ سے وابسطہ ہیں۔ ریاضی اور فزکس سے خصوصی دلچسپی رکھتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *